ٹیگ کے محفوظات: ہیروں

اے سمندر ! مرے آباد جزیروں میں نہ آ

منصور آفاق ۔ غزل نمبر 18
موج بن کر کہیں ہاتھوں کی لکیروں میں نہ آ
اے سمندر ! مرے آباد جزیروں میں نہ آ
خاک میں تجھ کوملادے گی کوئی تیز نظر
بادشاہوں کی طرح دیکھ فقیروں میں نہ آ
بند کردے گی تجوری میں تجھے تیری چمک
کنکروں میں کہیں رہ،قیمتی ہیروں میں نہ آ
جنگ شطرنج ہے ، چالوں کا سلیقہ ہے فقط
ہوش کر ، دیکھ برستے ہوئے تیروں میں نہ آ
عمر منصور اڑانوں میں فقط اپنی گزار
دام پہچان شکاری کے، اسیروں میں نہ آ
منصور آفاق