ٹیگ کے محفوظات: نسخہء الفت میرا

نسخہء الفت میرا

گر کسی طور ہر اک الفتِ جاناں کا خیال

شعر میں ڈھل کے ثنائے رُخِ جانانہ بنے

پھر تو یوں ہو کہ مِرے شعر و سخن کا دفتر

طول میں طولِ شبِ ہجر کا افسانہ بنے

ہے بہت تشنہ مگر نسخہء الفت میرا

اس سبب سے کہ ہر اک لمحہء فرصت میرا

دل یہ کہتا ہے کہ ہو قربتِ جاناں میں بسر

فیض احمد فیض