ٹیگ کے محفوظات: موجِ خرامِ عید

موجِ خرامِ عید

عید آئی تو یاد آنے لگے

دُور کے چاند‘ روشنی کے داغ

پیار کے پُھول‘ دوستی کے داغ

ہجر کے گیت‘ خامُشی کے داغ

نِت نئے زخم مُسکرانے لگے

زخم ناداریِ گُلستاں کے

زخم پُرکاریِ نگہباں کے

زخم غم خواریِ بیاباں کے

سیکڑوں تیِر اک رگِ جاں ہے

عِید بھی کیا بہار ساماں ہے

شکیب جلالی