ٹیگ کے محفوظات: زندگی جیسی ایک لڑکی

زندگی جیسی ایک لڑکی

نظر کے بدلتے ہوئے پینترے سے

فنا کر کے

دیتی ہے خیرات بھی پھر سے جینے کی

آدھی شکن کے تبسم سے اک جرعہءِوہم پینے کی

میں اک ستارہ اشارے کے رُخ

اور محراب وعدے کی قبلہ نمائی میں

اس کی طرف منہ کئے

بے نیازی کے معبود کے روبرو ہوں

تمنا کے سو بار ٹوٹے ہوئے تار میں

حرف حرف آیتوں کو پروتے ہوئے

سجدہ جُو ہوں

آفتاب اقبال شمیم