پیغام -۲

پلکوں پر چنچل چنچل سپنے آ جاتے ہیں

جب آکاش پہ کالے کالے بادل چھاتے ہیں

سپنوں کی بارش میں ترا آنچل لہراتا ہے

اور بادل کی اوٹ میں چندا بھی شرماتا ہے

دل کے آنگن میں جب آ کر پنچھی گاتے ہیں

تیری میٹھی یاد کے سارے سُر بندھ جاتے ہیں

شام ڈھلے جب شہر کنارے سورج سوتا ہے

اک جادُو سا شہرِ طرب میں سب پر ہوتا ہے

اور مرا دل تنہا تنہا بیٹھا روتا ہے

یاور ماجد

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s