لذتِ غم وہی تو پائیں گے

ہر مصیبت پہ مسکرائیں گے
لذتِ غم وہی تو پائیں گے
جرأتِ برق آزمائیں گے
ہم بھی ایک آشیاں بنائیں گے
جس قدر ان سے مُلتفت ہو گے
تم سے وہ دور ہوتے جائیں گے
حوضِ کوثر سے آرہے ہیں ہم
تیری آنکھوں سے پی کے جائیں گے
آنے والوں کا احترام، شکیبؔ
جانے والے کبھی نہ آئیں گے
شکیب جلالی

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s