تُو بُلائے گا بھی تَو آئے گا کون

رَوِشِ دِل تری بھُلائے گا کون
تُو بُلائے گا بھی تَو آئے گا کون
ہم نے کردی اگر نمائشِ غم
تیرے کوچے میں آئے جائے گا کون
بزمِ عشّاق میں ہے سنّاٹا
اُس نے پوچھا ہے کہ نبھائے گا کون
چَپّے چَپّے پر ایک قصرِ اَنا
دیکھنا یہ ہے اِن کو ڈھائے گا کون
میری ایذا پسندیوں کو ہے فکر
تم نہ ہو گے تو پھر ستائے گا کون
رنج و غم کو عزیز ہُوں ضامنؔ
ورنہ یوں روز آئے جائے گا کون
ضامن جعفری

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s