پاک ارضِ وطن کے جیالے

پاک ارضِ وطن کے جیالے

یہ جواں ہیں بڑی شان والے

پاک بے باک اِن کی جوانی

جرأتوں عظمتوں کی نشانی

وقت لکھے گا اِن کی کہانی

آنے والی سحر کے اُجالے

یہ جواں ہیں بڑی شان والے

اِن سے عزت ہمارے وطن کی

اِن سے رنگینیاں انجمن کی

یہ ہیں خوشبو وفائے چمن کی

پاک ماؤں کی گودی کے پالے

یہ جواں ہیں بڑی شان والے

ماہ و خورشید کے ہمسفر ہیں

یہ جواں فاتحِ بحر و بر ہیں

پاک سرحد پہ سینہ سپر ہیں

فتح نصرت کا پرچم سنبھالے

یہ جواں ہیں بڑی شان والے

میری آواز کی شان ہیں یہ

میرے گیتوں کا ارمان ہیں یہ

میرے سنگیت کی جان ہیں یہ

میری آواز اِن کے حوالے

یہ جواں ہیں بڑی شان والے

(۱۸ ستمبر ۱۹۶۵ ۔ ملکہِ موسیقی روشن آرا بیگم)

ناصر کاظمی

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s