اے غازیانِ صاحبِ کردار دیکھنا

اے غازیانِ صاحبِ کردار دیکھنا

بچ کر نہ جائے لشکرِ کفار دیکھنا

سارے جہاں کی تم پہ نظر ہے بڑھے چلو

ہر گام سوئے فتح و ظفر ہے بڑھے چلو

خالی نہ جائے کوئی بھی اب وار دیکھنا

بچ کر نہ جائے لشکرِ کفار دیکھنا

راہِ خدا میں بدر کے اصحاب کی طرح

بڑھنا ہے تم کو نوح کے سیلاب کی طرح

کرنا ہے آج کفر کو مسمار دیکھنا

بچ کر نہ جائے لشکرِ کفار دیکھنا

رکھنا ہے تم کو ملتِ اسلام کا بھرم

شیرانہ ہر محاذ پہ آگے بڑھے قدم

ایمان پر ہے کفر کی یلغار دیکھنا

بچ کر نہ جائے لشکرِ کفار دیکھنا

اللہ اور رسولؐ کا پیغام ہے وہی

اسلام اور دشمنِ اسلام ہے وہی

اے پیروانِ حیدرِ کرار دیکھنا

بچ کر نہ جائے لشکرِ کفار دیکھنا

بارہ کروڑ ہونٹوں پہ ہے ایک ہی صدا

اے ارضِ پاک تیرا نگہبان ہے خدا

ظاہر ہوئے ہیں فتح کے آثار دیکھنا

بچ کر نہ جائے لشکرِ کفار دیکھنا

(۸ دسمبر ۱۹۷۱ ۔ اُستاد امانت علی خاں ، فتح علی خاں )

ناصر کاظمی

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s