انکم ٹیکس

انہوں نے پوچھا کہ جو کمایا کدھر سے آیا کدھر گیا وہ

کہا بتائیں گے کیسے آیا مگر نہ پوچھو جدھر گیا وہ

کمائی محنت کی راس آئی کبھی غریبی نہ پاس آئی

بغیر محنت کے جو بھی پایا جدھر سے آیا اُدھر گیا وہ

بہت سمجھتا تھا خود کو شاطِر تمہارا نادان دوست باصِرؔ

ذرا سے اک فائدے کی خاطر بڑا سا نقصان کر گیا وہ

باصر کاظمی

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s