پھر کئی جسم اداسی میں بھی ڈھالے ہم نے

ڈاکٹر وقار خان ۔ غزل نمبر 6
پڑتے دیکھے ہیں جبھی چاند میں ہالے ہم نے
پھر کئی جسم اداسی میں بھی ڈھالے ہم نے
کتنے چہروں کو تری یاد میں ہم نےچوما
کتنے سینوں میں چھپے درد سنبھالے ہم نے
اس نے اک بار ہمیں آنکھ اٹھا کر دیکھا
کتنے اس بات کے مفہوم نکالے ہم نے
ہاتھ پھیلاتے ہوئے کانپے تو یاد آتا ہے
اپنی شاہی میں ستارے بھی اچھالے ہم نے
اپنے چہرے کی چمک تجھ پہ بسر کرنا پڑی
کتنی مشکل سے ترے نقش اجالے ہم نے
ڈاکٹر وقار خان

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s