جابر جابر اپنا عِجز دکھاتا رہ

ماجد صدیقی ۔ غزل نمبر 12
نیکوں کی فہرست میں نام لکھاتا رہ
جابر جابر اپنا عِجز دکھاتا رہ
ہے تیرا مقدور، سرِ دربار یہی
چانٹے کھا اور گالوں کو سہلاتا رہ
پھیر سیاہی محرومی کے اُکروں پر
درس یہی، ہر آتی پل دُہراتا رہ
بندہ ہے تو اور بھلا کیا کام ترا
ہاتھ خداؤں کے آگے پھیلاتا رہ
ختم نہ ہونے دے اپنی یہ نادانی
بھینس کے آگے ماجدؔ بین بجاتا رہ
ماجد صدیقی

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s