محبت میں

محبت میں عبادت کا ایک وقت مقرر ہے

کسی مجذوب لمحے میں آنسووں سے بے ارادہ غسل کرنے کا

کسی نام کی تسبیح ہزاروں بار پڑھنے کا

سپردگی کا، بھینٹ چڑھنے کا

خود اپنے ہاتھ سے اپنے لہو کو سرد کرنے کا

کسی بجھتی ہوئی رنجور شب میں

دیے کی آتشیں لو کے بھڑکنے کا

تڑپنے کا

روح کے گمنام پنچھی کا بدن کی بدنما، بے دام نجاست سے نکلنے کا

محبت میں طہارت کا!!

ایک وقت مقرر ہے

اور یہ وقت ہے جب شیطانیت اپنی بقا کے واسطے ہزاروں داؤ چلتی ہے

وہ سارے داؤ! جن کے سبب ایک بارگاہِ دل مقتل میں بدل جائے

طلب کی دہلیز پر رکھے مہکتے سرخ پھولوں سے لہو کی تیز بُو آئے

نینا عادل

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s