جوالا مکھی

ناگہاں

آتشیں لو بھڑکنے لگی سبز پتّوں تلے

تلملاتی، غضب ناک اور ۔۔۔ مشتعل

آگ

یکلخت بے تاب ہو کر اٹھی

آن کی آن میں

بیل بوٹے، شجر ۔۔۔

پھول، پتّے، ثمر ۔۔۔

راکھ کاڈھیر ہونے لگے اس طرح

سرخ شعلے نگلنے لگے گھونسلے

(گھونسلوں میں پڑے گوشت کے لوتھڑے)

بس دھواں رہ گیا دور تک راہ میں

اور بدلتا گیا ایک جنگل ہرا! دیکھتے دیکھتے

سرمگیں خاک میں

سبز منظر کوئی یوں جلا آنکھ میں

نینا عادل

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s