مگر حضور زمانے کا اعتبار نہیں

قمر جلالوی ۔ غزل نمبر 80
کسی کو دل مجھے دینا تو ناگوار نہیں
مگر حضور زمانے کا اعتبار نہیں
وہ آئیں فاتحہ پڑھنے اب اعتبار تو نہیں
کہ رات ہو گئی دیکھا ہوا مزار نہیں
کفن ہٹا کر وہ منہ بار بار دیکھتے ہیں
ابھی انھیں مرے مرنے کا اعتبار نہیں
قمر جلالوی

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s