کھِل گئی ماندِ گلُ سوَ جا سے دیوارِ چمن

دیوانِ غالب ۔ غزل نمبر 137
برشکالِ@ گریۂ عاشق ہے@ دیکھا چاہئے
کھِل گئی ماندِ گلُ سوَ جا سے دیوارِ چمن
اُلفتِ گل سے غلط ہے دعوئ وارستگی
سرو ہے باوصفِ آزادی گرفتارِ چمن
ہے نزاکت بس کہ فصلِ گل میں معمارِ چمن
قالبِ گل میں ڈھلی ہے خشتِ دیوارِ چمن
@ ’طباطبائ میں ہے کی جگہ ’بھی‘ ہے۔
مرزا اسد اللہ خان غالب