معشوقِ شوخ و عاشقِ دیوانہ چاہئے

دیوانِ غالب ۔ غزل نمبر 213
ہے وصل ہجر عالمِ تمکین و ضبط میں
معشوقِ شوخ و عاشقِ دیوانہ چاہئے
اُس لب سے مل ہی جائے گا بوسہ کبھی تو، ہاں!
شوقِ فضول و جرأتِ رندانہ چاہئے
مرزا اسد اللہ خان غالب