بارے اپنی بے کسی کی ہم نے پائی داد، یاں

دیوانِ غالب ۔ غزل نمبر 158
دل لگا کر لگ گیا اُن کو بھی تنہا بیٹھنا
بارے اپنی بے کسی کی ہم نے پائی داد، یاں
ہیں زوال آمادہ اجزا آفرینش کے تمام
مہرِ گردوں ہے چراغِ رہگزارِ باد، یاں
مرزا اسد اللہ خان غالب