آئنہ زانوئے فکرِ اختراعِ جلوہ ہے

دیوانِ غالب ۔ غزل نمبر 283
حسنِ بے پروا خریدارِ متاعِ جلوہ ہے
آئنہ زانوئے فکرِ اختراعِ جلوہ ہے
تا کُجا اے آگہی رنگِ تماشا باختن؟
چشمِ وا گر دیدہ آغوشِ وداعِ جلوہ ہے
مرزا اسد اللہ خان غالب