ہم کو دیکھو کہ لگے چلنے تو جاتے ہی رہے

دیوان اول غزل 642
وعدے ہر روز رہے اور تم آتے ہی رہے
ہم کو دیکھو کہ لگے چلنے تو جاتے ہی رہے
میر تقی میر