پانی پانی شرم مفرط سے ہوئی جاتی ہے شمع

دیوان سوم غزل 1153
آگے جب اس آتشیں رخسار کے آتی ہے شمع
پانی پانی شرم مفرط سے ہوئی جاتی ہے شمع
میر تقی میر