وحشت میں جو سیا سو کہیں کا کہیں سیا

دیوان اول غزل 154
یک پارہ جیب کا بھی بجا میں نہیں سیا
وحشت میں جو سیا سو کہیں کا کہیں سیا
محشر سوائے کیا ہو اسے التیام میر
یہ زخم سینہ جائے گا میرا وہیں سیا
میر تقی میر