نرگس کا جس سے رنگ شکستہ بھی اڑ چلا

دیوان اول غزل 164
کس طور تونے باغ میں آنکھوں کے تیں ملا
نرگس کا جس سے رنگ شکستہ بھی اڑ چلا
میر تقی میر