لب ساغر پہ منھ رکھ رکھ کے ہر شیشہ بہکتا تھا

دیوان اول غزل 152
مئے گلگوں کی بو سے بسکہ میخانہ مہکتا تھا
لب ساغر پہ منھ رکھ رکھ کے ہر شیشہ بہکتا تھا
جلا کیونکر نہ ہو گا آشیان بلبل بے کس
برنگ آتش خس پوش رنگ گل دہکتا تھا
میر تقی میر