شور و شر سے میرے اک فتنہ رہا کرتا تھا رات

دیوان دوم غزل 780
یاد ایامے کہ ہنگامہ رہا کرتا تھا رات
شور و شر سے میرے اک فتنہ رہا کرتا تھا رات
میر تقی میر