سو تو بہا تھا خوں ہو آگے پہلے دائو ہی ہارے شرط

دیوان چہارم غزل 1409
دل کا لگانا جی کھوتا ہے اس کو جگر ہے پیارے شرط
سو تو بہا تھا خوں ہو آگے پہلے دائو ہی ہارے شرط
میر تقی میر