رقص بسمل تم سنو ہو جیسا رقص

دیوان سوم غزل 1148
ہے دل بے تاب کا بھی ویسا رقص
رقص بسمل تم سنو ہو جیسا رقص
میر تقی میر