دشت میں آندھیاں چلا ویں گے

دیوان اول غزل 626
ہم جنوں میں جو خاک اڑا ویں گے
دشت میں آندھیاں چلا ویں گے
میرے دامن کے تار خاروں کو
دشت میں پگڑیاں بندھاویں گے
میر تقی میر