تیرا بیمار آج تو خوش ہے

دیوان اول غزل 621
صبح سے بن علاج تو خوش ہے
تیرا بیمار آج تو خوش ہے
میر پھر کہیو سرگذشت اپنی
بارے یہ کہہ مزاج تو خوش ہے
میر تقی میر