تا صبح دوصد نالہ سر انجام کریں گے

دیوان اول غزل 618
دن دوری چمن میں جو ہم شام کریں گے
تا صبح دوصد نالہ سر انجام کریں گے
ہو گا ستم و جور سے تیرے ہی کنایہ
دوشخص جہاں شکوئہ ایام کریں گے
آمیزش بے جا ہے تجھے جن سے ہمیشہ
وے لوگ ہی آخر تجھے بدنام کریں گے
نالوں سے مرے رات کے غافل نہ رہا کر
اک روز یہی دل میں ترے کام کریں گے
گر دل ہے یہی مضطرب الحال تو اے میر
ہم زیر زمیں بھی بہت آرام کریں گے
میر تقی میر