اس ستمگر کے ہم ہیں شہر غریب

دیوان چہارم غزل 1360
کوئی اپنا نہ یار ہے نہ حبیب
اس ستمگر کے ہم ہیں شہر غریب
سر رگڑتے اس آستاں پر میر
یاری کرتے اگر ہمارے نصیب
میر تقی میر