معتبر مانئے حیلے اُس کے

آفتاب اقبال شمیم ۔ غزل نمبر 67
حکمتیں اسکی، وسیلے اُس کے
معتبر مانئے حیلے اُس کے
وُہ جو مصلوب ہوا، زندہ ہے
دیں گواہی یہ قبیلے اُس کے
جس سے تخریب بپا ہو، وُہ شرر
دُور سے لائیں فتیلے اُس کے
آ گئی دستِ تصور پہ خراش
نقش ایسے تھے کٹیلے اُس کے
کیسی یکسانیوں میں رہتا ہے
سارے آفاق ہیں نیلے اُس کے
معجزہ گر ہے تمنا کی کشید
ایک دو گھونٹ ہی پی لے اُس کے
آفتاب اقبال شمیم

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s