تمہارے جبر کو میں مسترد کرتا رہوں گا

آفتاب اقبال شمیم ۔ غزل نمبر 74
یہ کارِ خیر تا روزِ ابد کرتا رہوں گا
تمہارے جبر کو میں مسترد کرتا رہوں گا
چراغِ خواب یونہی تو نہیں روشن رکھا ہے
میں کل کے آنے والوں کی مدد کرتا رہوں گا
خبر سازی کے دن ہیں اور یہ ہے کارِ مشکل
مگر میں امتیازِ نیک و بد کرتا رہوں گا
آفتاب اقبال شمیم

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s