تب میرا دل…

تب میرا دل بجھ جاتا ہے

میں ہوں جگ جیون کے جوہر ڈھونڈنے والے جوہریوں کا جویا

میرا دل بچھ بچھ جاتا ہے

اس پتلے گیلے گیلے آبی کاغذ پر

جو یوں دور تک اس پانی پر چسپیدہ ہے

جس دن باری کا پانی لگتا ہے

اور سڑک کے ساتھ اک گھنے ذخیرے والی کیاری

تھمے ہوئے اور جمے ہوئے پارے سے بھر جاتی ہے

جب ان سطحوں پر کرنوں کی دھول بکھر جاتی ہے

اور ہوا کا ہلکے سے ہلکا جھونکا بھی ان کو چھونے سے ڈرتا ہے

تب تو ادھر ادھر ہی میرا دل کھنچتا ہے

مجھ کو بھا جاتی ہے

اچھے اچھے خیالوں کی چتریلی چادر اوڑھ کے ان چھتناروں میں یہ

بھٹکنے والی ٹھنڈک

سب کچھ تج کے، میں جب اس ٹھہرے پانی پر

سایوں اور شعاعوں کی جھلمل میں کھو جاتا ہوں

سارا آسمان اسی اجلے پانی پہ اتر کر مجھ کو دیکھ رہا ہوتا ہے

میں ہوں جگ جیون کے جوہر ڈھونڈنے والے جوہریوں کا جویا

مجید امجد

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s