پکار

کالی چونچ اور نیلے پیلے پنکھوں والی

چوں چوں، چچر چچر، چچلائی ’’لالی‘‘

بیٹھے بیٹھے اڑ کر

اڑ تے اڑتے مڑ کر

بجلی کے اک تار پہ آ کر بیٹھ گئی ہے

موت کا جھولا جھول رہی ہے

میرے دل سے چیخ اک ابھری، میں للکارا

(جیسے کوئی بجے نقارہ)

میری صدا پر بامِ اجل سے کندے تول کے اڑ گئی ’’لالی‘‘

نیلے پیلے پنکھوں والی

اور اک تم ہو

انگاروں پر بیٹھے ہو اور پھولوں کے سپنوں میں گم ہو

میرے دل کی اک اک چیخ تمہیں بےسود پکارے

مجید امجد

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s