ماڈرن لڑکیاں

سنہری دُپہروں رُپہلی رُتوں

میں، سورج مکھی کے شگوفوں کے پاس

چناروں سے قد اور ستاروں سے نین

زرافشاں بدن، زغفرانی لباس

حسیں گوریاں گنگناتی پھریں

مٹکتی پھریں، ڈگمگاتی پھریں

کڑی دھوپ میں قاشِ زر سے تراشی ہوئی پنڈلیاں

لہکتی پھریں، تھرتھراتی پھریں

سجل راستوں سے گزر جائیں یہ

نگینوں بھرے آبشاروں کی طرح

زمانوں کے د ل میں اتر جائیں یہ

لجیلی کٹیلی کٹاروں کی طرح

سنہری دوپہروں کو ٹھنڈک عطا کرنے والے خیالوں کے جادو جگاتی پھریں

مٹکتی پھریں، ڈگمگاتی پھریں

Philip Booth کی نظم کا ترجمہ

مجید امجد

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s