عیدالاضحیٰ

ہزار جشنِ مسرت ترے گلستاں میں

ہزار رنگِ طرب تیرے روئے خنداں پر

جھکی ہے شوکتِ کونین تیرے قدموں میں

پڑا ہے سایہ ترا اوجِ سربلنداں پر

تری حیات کا مسلک، ترے عمل کا طریق

اساس اس کی ہے کیشِ وفا پسنداں پر

تجھے عزیز تو ہے سنتِ براہیمی

تری چھری تو ہے حلقومِ گوسفنداں پر

مگر کبھی تجھے اس بات کا خیال آیا؟

تری نگاہ نہیں دردِ دردمنداں پر

مجید امجد

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s