ایک دعا

خلّاقِ دوجہاں! مری آنکھوں کو نور دے

چھینی ہوئی یہ دولتِ کیف و سرور دے

پھر قوتِ نظارۂ دشت و دیار بخش!

پھر طاقتِ مشاہدۂ نزد و دور دے

مجھ پر نگاہِ مہر سمیع و بصیر کر

مجھ کو نویدِ لطف خدائے غفور دے

اللہ! مجھ کو دیدۂ بینندہ کر عطا

مولا! تو ہی دوائے دلِ ناصبور دے

پھو سونپ میری آنکھوں کو آنکھوں کی روشنی

یہ میری چیز پھر مجھے دے اور ضرور دے

مجید امجد

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s