مارکوپولو برج

شہر سے کچھ پرے

پُل کے نیچے اُنہیں

خشک ندی کی بہتی ہوئی ریت پر

باڑماری گئی

سینہءِشب میں ہلکی سی لرزش ہوئی

چند صحنوں میں قد کے برابر بلندی سے

چیخیں گریں

بے بسی کے اندھیرے کنوئیں میں دھمک سی ہوئی

اور اوپر کہیں لوحِ تقدیر پر

حاکم نیک اندیش کی عمر میں اور توسیع

کر دی گئی

آفتاب اقبال شمیم

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s