پھٹ جگر دے، اِنج ہُن پھول کے دسّاں گا

ماجد صدیقی (پنجابی کلام) ۔ غزل نمبر 57
روون تھانویں، اپنے آپ تے ہسّاں گا
پھٹ جگر دے، اِنج ہُن پھول کے دسّاں گا
پکن تے دیو، دُکھ سُولاں دی، کھیتی نوں
بجلی بن کے، میں ائی ایس تے وسّاں گا
سکھ دے ساہ تے، حق میرا وی بَندا اے
جگ توں میں، ایس حق نوں، کیوں نئیں کھساں گا
اک واری تے ایہدی وی، کنڈ لاں گا میں
غم دے سینے، کلر وانگوں رسّاں گا
ماجد دکھ نوں، جَپھی تے میں پا لئی اے
ہن ایس دیو دیاں، مشکاں باہواں کسّاں گا
ماجد صدیقی (پنجابی کلام)

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s