میں کولوں تے نس نس جاندا، اپنا وی پرچھانواں

ماجد صدیقی (پنجابی کلام) ۔ غزل نمبر 100
میں تیری بے مہری دے سر، کیہڑی تہمت لاواں
میں کولوں تے نس نس جاندا، اپنا وی پرچھانواں
میں جیون دیاں قدماں اگے، رُڑھدا کھڑدا روڑا
توں اوہ ایں، منہ زور زمانہ وی نئیں جیہدا سانواں
مدتاں ہوئیاں کدے نہ تپیا، خورے کتھے کھپیا
جی کردا اے، ٹھنڈے برف کلیجے نوں، اگ لانواں
کیہ کیہ ہاڑے کیتے، فروی سکھ دا ساہ نئیں آیا
کیہڑے دُکھ دی لامے لگیا، خورے دل دا نانواں
ماجدُ یار جیہے من موہنے، اینویں نئیں لبھ پیندے
میں تیری جاگھیں ہوواں تے، ایس گل دی ونڈ پاواں
ماجد صدیقی (پنجابی کلام)

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s