جندڑی سولاں نال پَُرتی، تن وی کر لیا کھورا

ماجد صدیقی (پنجابی کلام) ۔ غزل نمبر 101
میں کیہ سگھڑ سیانا بنیا، جی نوں لا لیا جھورا
جندڑی سولاں نال پَُرتی، تن وی کر لیا کھورا
گزرے ہوئے ویلے دیاں لختاں، اکھیوں نیر چواون
چنگا ائی ہے جے، اج دا ورقہ، چھڈ دیاں چِٹا کورا
آؤندی رُت دے خوف نے خورے، کیہ کیہ رنگ وکھاؤنے
چیونٹیاں ورگے چُندے پھرئیے، سُکھ دا بھورا بھورا
ویکھیں سچ دی سولی تے ائی، کدھرے نہ چڑھ جائیے
کجھ وی کرن نہ دیوِیں، سانوں دل دیا گجھیا چورا
ماجد صدیقی (پنجابی کلام)

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s