آپی آپ چبا لئے، پھُلاں ورگے سکھ

ماجد صدیقی (پنجابی کلام) ۔ غزل نمبر 88
کیہ کیہ چیکاں ماریاں، کیہ کیہ منگے دکھ
آپی آپ چبا لئے، پھُلاں ورگے سکھ
بھری بہار چ ویکھ کے، میرے سراِچ سواہ
ہس ہس تاڑی ماردے، بھرے بھراتے رکھ
اکو پیار سوال سی، چلیا نالوں نال
پِچّھا نئیں سی چھوڑ دی، دُوں اکھیاں دی بھکھ
تک تک راہواں تیریاں، اکھیں چڑھیا زنگ
لے ہن توں وی سانبھ لے، چانن ورگا مکھ
نہ توں لنبو تھیونا، نہ دیوے دی لاٹ
وچوں وچ ائی ماجداُ، پل پل نہ پیا دُھکھ
ماجد صدیقی (پنجابی کلام)

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s