سرِ وادیِٔ سینا

سرِ وادئ سینا از فیض احمد فیض

  1. لہو کا سراغ
  2. خونِ تمنا دریا دریا، دریا دریا عیش کی لہر
  3. کاسہء چشم میں خوں نابِ جگر لے کے چلو
  4. یہاں سے شہر کو دیکھو
  5. یوں فضا مہکی کہ بدلا مرے ہمراز کا رنگ
  6. غم نہ کر، غم نہ کر
  7. بَلیک آؤٹ
  8. اعلانِ جنوں دل والوں نے اب کے بہ ہزار انداز کیا
  9. سپاہی کا مرثیہ
  10. ایک شہرِ آشوب کا آغاز
  11. پھر دل کے آئینے سے لہو پھوٹنے لگا
  12. شب و روزِ آشنائی مہ و سال تک نہ پہنچے
  13. سوچنے دو
  14. نہ کرم ہے ہم پہ حبیب کا، نہ نگا ہ ہم پہ عدو کی ہے
  15. سرِ وادیِ سینا
  16. دُعا
  17. دلدار دیکھنا
  18. ہارٹ اٹیک
  19. عہد و پیماں سے گزر جانے کو جی چاہتا ہے
  20. مرثیے
  21. خورشیدِ محشر کی لو
  22. یا شمع پگھل رہی ہے
  23. اِک قدح ساقیِ مہوش جو کرے ہوش تمام
  24. جرسِ گُل کی صدا
  25. فرشِ نومیدیِ دیدار
  26. ٹوٹی جہاں جہاں پہ کمند
  27. اب کے بھی دل کی مدارات نہ ہونے پائی
  28. حذر کرو مرے تن سے
  29. تہ بہ تہ دل کی کدورت
  30. جس بار خزاں آئی، سمجھے کہ بہار آئی
  31. کنارے آ لگے عمرِ رواں یا دل ٹھہر جائے
  32. میں تیرے سپنے دیکھوں
  33. بھائی
  34. داغستانی خاتون اور شاعر بیٹا
  35. بہ نوکِ شمشیر
  36. آرزو
  37. سالگرہ
  38. کتبہ
  39. تیرگی جال ہے ۔۔۔
  40. نسخہء الفت میرا

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s